April 13, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/nyctheblog.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253
بھارتی سپریم کورٹ کا متنازع سی اے اے ایکٹ کے نفاذ پر حکومت کو نوٹس

بھارتی سپریم کورٹ میں متنازع شہریت ترمیمی قانون کے نفاذ کے خلاف دائر درخواستوں پر سماعت ہوئی، سپریم کورٹ نے درخواستوں پر جواب کے لیے حکومت کو نوٹس جاری کر دیا۔

حکومتی وکیل نے درخواستوں پر جواب کے لیے وقت مانگ لیا، جس پر عدالت نے 8 اپریل تک کا وقت دیتے ہوئے اگلی سماعت 9 اپریل تک ملتوی کر دی۔

سی اےاے ایکٹ (شہریت ترمیمی قانون) کے خلاف 237 درخواستیں دائر کی گئی ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

درخواست گزاروں کا کہنا ہے کہ سی اے اے ایکٹ مسلمانوں کے ساتھ مذہب کی بنیاد پر امتیازی سلوک کرتا ہے، اس سے آئین کے آرٹیکل 14 کے تحت ‘مساوات کے حق’ کی خلاف ورزی ہوتی ہے۔

درخواست گزاروں میں کیرالہ کی انڈین یونین مسلم لیگ، ترنمول کانگریس لیڈر مہوا موئترا، کانگریس لیڈر جے رام رمیش، آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی سمیت دیگر شامل ہیں۔

2019 میں منظور کیے جانے والے شہریت ترمیمی قانون کا گزشتہ ہفتے نفاذ کیا گیا تھا، بھارت میں شہریت ترمیمی قانون کے تحت پاکستان سمیت پڑوسی ملکوں سے آنے والے ہندوؤں اور دیگر اقلیتی گروپوں کو بھارتی شہریت مل سکے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *