May 21, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/nyctheblog.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253
2 کروڑ 60 لاکھ بچے سکولوں سے باہر، تعلیمی ایمرجنسی نافذ کرینگے: وزیراعظم

 اسلام آباد (خبر نگار خصوصی+ نوائے وقت رپورٹ)  وزیراعظم نے امیر قطر کو فون کیا ہے، جس میں انہوں نے عید کی مبارک باد کے ساتھ دونوں ممالک کے مابین تجارتی تعلقات کے فروغ پر بات چیت کی ہے۔ شہباز شریف نے  پاکستان اور قطر کے درمیان قریبی برادرانہ تعلقات اور دونوں ممالک کے مشترکہ مفاد کے تمام شعبوں میں ملکر کام کرنے کی خواہش کا اعادہ کیا۔ شہباز شریف نے پاکستان اور قطر کے مابین اقتصادی اور تجارتی تعلقات کو مزید فروغ دینے پر بھی بات چیت کی۔ امیر قطر شیخ تمیم بن حمد الثانی نے وزیراعظم شہباز شریف کو عید الفطر کی مبارکباد پیش کی اور پاکستانی قوم کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ وزیراعظم کی جانب سے امیر قطر کو پاکستان کا سرکاری دورہ کرنے کی دعوت بھی دی گئی، جس پر امیر قطر نے وزیراعظم کو یقین دلایا کہ وہ جلد پاکستان کا دورہ کرنے کے خواہشمند ہیں۔ ٹیلی فونک گفتگو میں دونوں رہنماؤں نے پاکستان اور قطر کے ایک دوسرے کے ساتھ مل کر کام کرنے اور تمام شعبوں میں تعاون کو مزید وسیع کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ علاوہ ازیں شہباز شریف  نے کہا  کہ ملک بھر میں تعلیمی ایمرجنسی نافذ کریں گے، صحیح معنوں میں بچوں اور بچیوں کو تعلیم سے آراستہ کریں گے۔ اسلام آباد میں وزیراعظم شہباز شریف نے دانش سکول سائٹ کے معائنے کی تقریب سے خطاب  میں کہا کہ  نوازشریف کی لیڈر شپ میں دانش سکول کا آغاز کیا، ایسے بچے جن کے والدین دنیا سے رخصت ہوگئے دانش سکول ان کا سہارا بنا۔ انہوں نے کہا کہ ہزاروں بچوں اور بچیوں کے ماں باپ کے پاس تعلیم کیلئے وسائل نہیں تھے، ہمیں تنقید کے نشتر کا سامنا کرنا پڑا کہ شہبازشریف یہ کیوں بنا رہا ہے، میں نے کہا جب امرا کیلئے ایچی سن کالج بن سکتے ہیں، تو غریب اور یتیم بچوں کیلئے درسگاہیں کیوں نہیں بنا سکتے۔ اسلام آباد میں شاندار ہاؤسنگ سوسائٹیز بن چکی ہیں، امراء کے بچوں کیلئے سکول بن چکے ہیں، کیا تعلیم صرف امراء کے بچوں کا حق ہے؟۔ کیا اسلام آباد میں تعلیم غریب بچوں اور بچیوں کا حق نہیں۔ وفاق کے لیول پر اس نئے دور کا آغاز ہورہا ہے۔ بلوچستان پاکستان کا سب سے بڑا صوبہ ہے، ہم بلوچستان میں وزیراعلیٰ کے ساتھ مل کر حصہ ڈالیں گے،  2کروڑ 60لاکھ بچے اور بچیاں سکول سے باہر ہیں، اس سے بڑی مجرمانہ غفلت نہیں ہوسکتی، ہم اس کے لیے نئے ایونٹ کا انعقاد کریں گے، ہم تعلیمی ایمرجنسی نافذ کریں گے۔ ہم نے نوازشریف کی قیادت میں 2لاکھ ٹیچرز پنجاب میں میرٹ پر بھرتی کیے تھے، ہم نے میرٹ پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا، ایچی سن اور مہنگے سکول راستہ روک رہے ہیں، ہم تمام قومی وسائل غریب طلباء کے قدموں میں نچھاور کریں گے۔  شہباز شریف نے خضدار اور کچلاک میں دھماکوں کی شدید مذمت کی ہے۔ وزیراعظم شہبازشریف نے حملوں میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے افسوس کا اظہار کیا۔ وزیراعظم  کاکہنا تھا کہ ایسی بزدلانہ کارروائیاں دہشت گردی کے خلاف ہمارے عزم کو متزلزل نہیں کر سکتیں۔ قوم تعلیم اور شعور کے بغیر ترقی وخوشحالی کی منزل حاصل نہیں کرسکتی۔ جب تک قوم کے کروڑوں بچوں کیلئے تعلیم کا بندوبست نہیں کیا جاتا اس وقت تک قائداعظم کے پاکستان کا خواب پورا نہیں ہو سکتا۔ دانش سکولوں کا دائرہ کار اسلام آباد، آزاد جموں وکشمیر، گلگت بلتستان  اور دیگر صوبوں تک بھی پھیلایا جا رہا ہے۔ گلگت بلتستان، آزاد جموں وکشمیر، بلوچستان اور سندھ کے دور دراز علاقوں میں دانش سکولوں کے قیام کیلئے سو فیصد وسائل وفاق کی جانب سے فراہم کئے جائیں گے کیونکہ ہم سمجھتے ہیں کہ اس سے بڑی قومی خدمت ہو ہی نہیں سکتی۔ شہبازشریف اور ترک صدر رجب اردگان کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا۔ شہبازشریف نے ترک صدر کو عیدالفطر کی مبارک باد دی اور عیدالفطر پر پاکستان اور ترک عوام کے لئے امن، خوشحالی اور نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ وزیراعظم نے باہمی دلچسپی کے تمام شعبوں میں دو طرفہ تعاون مزید مستحکم کرنے کے عزم کا اعادہ کیا۔ دونوں رہنماؤں نے بنیادی قومی مفادات پر ایک دوسرے کی بھرپور حمایت جاری رکھنے کا اعادہ کیا اور فلسطین میں قیام امن پر بھی زور دیا۔ وزیراعظم نے صدر اردگان کو جلد از جلد پاکستان کا دورہ کرنے کی دعوت دی۔ دورے سے سٹرٹیجک کوآپریشن کونسل کے ساتویں اجلاس کے امکانات بھی روشن ہو جائیں گے۔شہباز شریف نے عمان کے سلطان کو ٹیلی فون پر عیدالفطر کی مبارکباد دی ہے۔ وزیراعظم نے عمان اور پاکستان کے مابین دیرینہ برادرانہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں موجود تعاون کی وسیع استعداد پر روشنی ڈالی۔ وزیراعظم نے پاک عمان ادارہ جاتی اور اقتصادی روابطہ کے فروغ و مضبوطی کی اہمیت پر زور دیا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *